پاک بحریہ نے پاکستانی حدود میں داخل ہونیوالی بھارتی جدید آبدوز کا سراغ لگالیا 54

پاک بحریہ نے پاکستانی حدود میں داخل ہونیوالی بھارتی جدید آبدوز کا سراغ لگالیا

پاک بحریہ نے پاکستانی حدود میں داخل ہونیوالی بھارتی جدید آبدوز کا سراغ لگالیا





ترجمان پاک بحریہ کا کہنا ہے کہ پاک بحریہ نے ملکی سمندری زون میں موجود بھارتی آبدوز کا سراغ لگا لیا۔ ترجمان کے مطابق پاک بحریہ نے بھارت کی جدید اسلحہ اور ٹیکنالوجی سے لیس آبدوز کو واپس بھاگنے پر مجبور کردیا۔ پاکستان نے امن دوستی کا ثبوت دیتے ہوئے اس پر حملہ نہیں کیا۔

ترجمان پاک بحریہ کا کہنا ہے کہ بھارت کو سمندری محاذ پر بھی ایک بار پھر ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ پاک بحریہ نے اپنے سمندری زون میں موجود بھارتی آبدوز کا سراغ لگا لیا۔ پاک بحریہ نے سراغ لگا کر آبدوز کو پاکستانی پانیوں میں داخل ہونے سے روکا۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ یہ اہم کارنامہ پاکستان نیوی کی اعلیٰ صلاحیتوں کا منہ بولتا ثبوت ہے، پاک بحریہ نے اعلیٰ پیشہ ورانہ مہارتوں کے ساتھ ہر دم چوکنا رہتے ہوئے کامیابی سے بھارتی آبدوز کا سراغ لگا کر اُسے پاکستان کے پانیوں میں داخل ہونے سے روکا۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ امن قائم رکھنے کی حکومتی پالیسی کو مد نظر رکھتے ہوئے بھارتی آبدوز کو نشانہ نہیں بنایا گیا جو پاکستان کی امن پسندی کا غماز ہے۔ اس واقعہ سے سبق حاصل کرتے ہوئے بھارت کو بھی امن کی طرف راغب ہونا چاہیے- پاکستان کی بحری سرحدوں کے دفاع کے لئے پاک بحریہ ہر لمحہ مستعد و تیار ہے اور کسی بھی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی بھر پور صلاحیت رکھتی ہے۔



پاک بحریہ نے بھارتی آبدوز کی اپنی موجودگی کو خفیہ رکھنے کی ہر کوشش کو ناکام بنایا ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل نومبر 2016 کے بعد یہ دوسرا موقع ہے جب پاک بحریہ نے بھارتی آبدوزکا سُراغ لگایا۔ بھارتہ آبدوز انٹیلی جنس کام کرنے کیلئے پاکستانی پانیوں کے اندر آنا چاہتی تھی، جسے پاک بحریہ کی جانب سے ڈیٹک کیا اور انگیج کرنے کے بعد اسے پانی کی سطح پر آنے پر مجبور کیا تھا۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پاک بری اور فضائی فوج کے ساتھ ساتھ پاک بحریہ بھی موجودہ حالات میں ہائی الرٹ ہے۔ پاکستان کی جانب سے مقامی تیار کردہ سسٹم اور ہیلی کاپٹر سے منسلک جدید اسنار سسٹم سے مکار دشمن کی چالاکیوں کو ناکام بنایا۔



Spread the love
  • 2
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    2
    Shares
  • 2
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply