الحمد اللہ آج ضلعی ہیڈ کوارٹر نگر میں ہرسپو داس کی تقسیم بندی 37

الحمد اللہ آج ضلعی ہیڈ کوارٹر نگر میں ہرسپو داس کی تقسیم بندی- تحریر: محمد کاظم

الحمد اللہ آج ضلعی ہیڈ کوارٹر نگر میں ہرسپو داس کی تقسیم بندی




ہرسپو داس (ضلعی ہیڈ کوارٹر) جو کہ گلگت سے ضلع نگر کی سمت بذریعہ شاہراہ قراقرم آتے ہوئے گور جگلوٹ سے تھوڑا آگے پہلے ٹنل سے شروع ہوکر سکندر آباد نگر کے ابتدائی حدود میں ختم ہوتا ہے. چار ہزار(4000 Canal) کنال سےزائد “CPEC ROUTE” سے متصل قیمتیاراضی چار عشروں سے چار فریقین (مواضعات سکندر آباد، جعفر آباد، نلت اور راجگانِ نلت) کے درمیان تنازعے کی وجہ سے ناقابل تقسیم شکل میں بنجر پڑی تھی، آخرکار اس قضیہ کے حتمی حل کے سلسلے میں سن 2014ء میں فریقین کی طرف سے “شرعی عدالت” سے رجوع کیا گیا تھا، آج “حسینیہ سپریم کونسل نگر”، نگر کے دونوں معزز منتخب نمائندے (جناب جاوید حسین اور حاجی رضوان علی صاحب) اور قابل احترام علمائے کرام صاحبان نے مذکورہ شرعی عدالت کے فیصلے پہ من وعن عملدرآمد کرواتے ہوئے تقریباً چارہزار کنال سے زائد قابل کاشت زرعی اراضی کو چاروں فریقین کے زمینداروں اور کاشتکاروں میں پلاٹ بندی کرکے حوالا کیا، جسے زمینداروں نے موقع اور موسم کے مناسبت سے “شجرکاری” کا ادراک کرتے ہوئے آج کے دن ہی تقریباً پندرہ ہزار سے زائد پھلدار اور غیر پھلدار پودوں کی مذکورہ اراضی پہ منظم شجرکاری کرکے گلگت-بلتستان (GB) کی تاریخ میں ایک ریکارڈ قائم کیا.

ضلعی سطح پہ شجرکاری کا حق ادا کرتے ہوئے گلگت-بلتستان کی سب بڑی نرسری
“CPEC Agro & Forest Nursery Enterprise ”
کی طرف سے بھی اس نیک کام (شجرکاری) کا حصہ بنتے ہوئے ضرورت مند زمینداروں میں سیکنڈوں کی تعداد میں پودے تقسیم کئے گئے



Spread the love
  • 5
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    5
    Shares
  • 5
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply